تارکین وطناہم خبریں

برطانیہ میں پاکستانی خاتون ڈاکٹر کورونا سے جاں بحق

برطانیہ میں مقیم پاکستانی ڈاکٹر میمونہ رانا کورونا وائرس کے خلاف صف اول میں جنگ کے دوران اسی وائرس کا شکار ہوکر جاں بحق ہوگئیں تھیں ان کے شوہر نے انہیں خراج تحسین پیش کیا۔
تفصیلات کے مطابق 48 سالہ ڈاکٹر میمونہ رانا جن کا بنیادی تعلق لاہور سے تھا لندن میں اپنے شوہر ڈاکٹر عظیم قریشی اور آٹھ سالہ بیٹی کے ساتھ رہائش پذیر تھیں۔
ڈاکٹر عظیم قریشی نے اپنی بیوی کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے تصدیق کی کہ ہم دونوں کورونا وائرس کے خلاف صف اول میں لڑ رہے تھے اور میمونہ کو کورونا وائرس کی علامات 8 اپریل کو ظاہر ہونا شروع ہوئیں، 2 دن بعد ہم دونوں کے کورونا ٹیسٹ مثبت آئے۔
انہوں نے بتایا کہ 11 اپریل کو میمونہ کو سانس لینے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑا جس کے بعد انہیں لندن میں واقع ایک ہسپتال کی ایمرجنسی میں داخل کروادیا گیا جس کے بعد انہیں وینٹی لیٹر پر منتقل کردیا گیا، 16 اپریل کو جاں بحق ہوگئیں تھیں۔
ڈاکٹر عظیم نے مزید کہا کہ میری بیوی میمونہ رانا ایک عظیم عورت تھیں جو اپنے اردگرد موجود افراد میں امید دیتی تھیں اور ہمیشہ مثبت سوچ دیتی تھیں، وہ ایک پیار کرنیوالی بیوی ہماری بیٹی کی ماں تھیں، وہ ایک مختلف، عقل مند انتہائی اچھی ذات کی مالک تھیں، میں انہیں ہمیشہ یاد رکھوں گا، صرف ہمارا خاندان ہی نہیں پوری پاکستان کمیونٹی ان کی موت پر افسردہ ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button