جہلم

پنڈدادنخان میں پانی کے درینہ مسائل کے حل کیلئے غیر قانونی کنکشنز کاٹ دیئے گئے ہیں۔ عبدالستار عیسانی

جہلم: پنڈ دادنخان میں پانی کے درینہ مسائل کے حل کے لئے گزشتہ ایک ماہ میں اسسٹنٹ کمشنر کی زیر نگرانی 100 سے زائد غیر قانونی پانی کے کنکشنز کاٹے جا چکے ہیں، عوامی مسائل کے ازالہ کے لئے غیر قانونی کنکشن لگانے والوں کے خلاف ایف آئی آر بھی درج کروائی جا رہی ہیں، پنڈ دادنخان میں 8 کروڑ 4 لاکھ روپے کی لاگت سے شروع کی جانیوالی 22 نئی سکیموں کے ٹینڈرز 12 جون 2018 تک مکمل کیے جاینگے ۔

ان خیالات کا اظہار ڈپٹی کمشنر جہلم کیپٹن (ر) عبدالستار عیسانی نے ضلعی سطح پر واٹر سپلائی سکیموں کا جائزہ لینے کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ڈپٹی کمشنر عبدالستار عیسانی کا کہنا تھا کہ پنڈ دادنخان میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں۔

ڈی سی جہلم عبدالستار ایسانی نے تمام تحصیلوں کے ایس ڈی اوز پبلک ہیلتھ انجینئرنگ کو ہدایت جاری کیں کے وہ اسسٹنٹ کمشنرز کو تحصیلوں میں واٹر سپلائی سکیموں کا دورہ کروائیں گے ۔ ڈپٹی کمشنر نے ایکسین پبلک ہیلتھ اعتزاز نادر کو تمام سکیموں کو فنکشنل کرنے کی ہدایت دی ،انہوں نے اجلا س کو بتایا کہ وہ خود بھی تمام سکیموں کا جلددورہ کریں گے ۔

اجلاس میں اے سی جہلم زاہد خان، اے سی دینہ راجہ محمد سلیم ، اے سی سوہاوہ ملک اعجاز، اے سی پی ڈی خان مجاہد عباس، ڈپٹی ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ اشتیاق احمد،ڈی او انفارمیشن عثمان سندھو، ایکسین پبلک ہیلتھ اعتزاز نادر اورایس ڈی جہلم فیاض حسنین شاہ اوردیگر تحصیلوں سے ایس ڈی اوز نے شرکت کی۔

ڈپٹی کمشنر عبدالستار عیسانی کا کہنا تھا کہ پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے لئے دن رات کوشاں ہیں، انہوں نے بتایا کہ تحصیل جہلم اور دینہ میں 24 واٹر سپلائی سکیمیں فنکشنل ہیں جبکہ دیگر سکیموں کی جلد بحالی کی جائیگی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button