جہلم

شدید گرمی؛ نوجوانوں نے گرمی کی تمازات کم کرنے کیلئے دریائے جہلم اور چشموں کا رخ اختیار کر لیا

جہلم: شہر سمیت مضافاتی علاقوں میں گرمی کی شدت سے پریشان حال نوجوانوں کی بڑی تعداد نے گرمی کی تمازات کم کرنے کیلئے دریائے جہلم اور چشموں کا رخ اختیار کر لیا۔

مئی ،جون ، جولائی کے مہینوں میں عام مہینوں کی نسبت گرمی عروج پر پہنچ جاتی ہے جس کیوجہ سے نوجوان شہری ، بزرگ ، بچے دریاء اور چشموں کا رخ اختیار کر لیتے ہیں ، شہری گرمی کو دور بھگانے کے لئے دریائے جہلم سمیت سرائے عالمگیر، جگو ہیڈ، علی بیگ کے مقام پر چشموں کے ٹھنڈے پانی میں نہاتے اور لطف اٹھاتے دکھائی دیتے ہیں جہاں شدید گرمی کے موسم میں سخت ٹھنڈک محسوس ہوتی ہے۔

اس طرح نوجوان سارا سارا دن دریائے جہلم اور چشموں کے پانی سے نہاتے نظر آتے ہیں جبکہ امیر طبقے سے تعلق رکھنے والے افراد نے کوٹھیوں، بنگلوں کے اندر سوئمنگ پول تعمیر کروا رکھے ہیں اس طرح تازہ پانی حاصل کرنے کے لئے مالکان موٹریں وغیرہ چلا کر ٹھنڈے پانی کو زخیرہ کرکے نہاتے دکھائی دیتے ہیں اور متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والے منچلے نوجوان دریا اور چشموں کے پانی میں نہا کر اپنا شوق پورا کرتے ہیں۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت پنجاب کی جانب سے اگر سرکاری سطح پر دریائے جہلم کے کنارے پر اس طرح کے انتظامات کئے جائیں جہاں پانی ذخیرہ کرکے محفوظ تالاب بنوائے جائیں جس سے بچے بڑے دریا میں نہانے کی بجائے محفوظ تالاب میں نہا کر گرمی کی شدت کو کم کر سکیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button