تارکین وطن

اوسلو، ادبی تنظیم دریچہ کے زیراہتمام محفل مشاعرہ وموسیقی

اوسلو: ادبی تنظیم دریچہ ناروے میں ایک معروف ادبی تنظیم ہے جو گزشتہ 7 سالوں سے اپنی مدد آپ کے تحت اردو ادب کے فروغ کے لیے اپنی کاششوں کو جاری رکھے ہوئے ہے۔ دریچہ نے اوسلو میں ایک خوبصورت محفل مشاعرہ وموسیقی کا انعقاد کیا جس کو حاضرین اور نا ظرین نے سوشل میڈیا کے ذریعے خوب سراہااور دریچہ کی انتظامیہ کو اس کاوش پر مبارکباد پیش کی۔

محفل کی صدارت ناروے میں مقیم بین الاقوامی شہرت یافتہ اور پاکستان سے صدارتی ایوارڈ یافتہ شاعر جمشید مسرور نے کی۔پروگرام کی نقابت کے فرائض دریچہ کے جنرل سیکریڑی ادریس لاہوری نے بخوبی سر انجام دیئے۔ عوام الناس کے علاوہ ناروے میں مقیم پاکستانی و بھارتی ادبی شخصیات نے بھی مشاعرے میں بھرپور شرکت کی۔

پروگرام کے آغاز میں عاصمہ جہانگیر کی یاد میں شمع روشن کی گئی اور انکی مغفرت کے لیے دعا کی گئی۔ مقامی شعراء جنہوں نے اپنا کلام پیش کیا ان میں دریچہ کے صدر ڈاکٹر سید ندیم حسین، جنرل سیکریڑی ادریس لاہوری، خالد تھتھال ، اندرجیت پال، اسلم میر، ڈاکٹر سیف الرحمن،رائے بھٹی اور دیگر شامل ہیں۔جمشید مسرور نے بھی اپنا کلام پیش کیا اور خوب داد وصول کی۔

محفل موسیقی میں مقامی گلوکار مریم میر، شبیر خان ، آصف مسیح، چاند مسیح اور دیگر نے اپنی گاہیکی سے محفل میں خوب رنگے بھرے اور حاضرین سے بھرپور داد وصول کی۔ مہمان شعراء نے دریچہ تنظیم کا خوبصورت محفل سجانے پر شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ایسی تقریبات اور سرگرمیوں کے ذریعے ہم معاشرے کو ایک مکمل اور پرُ امن ماحول میسر کر سکتے ہیں اور ایسی تقریبات دیار غیر میں قابل ستائش ہیں جن کی وجہ سے اردو ادب کو فروغ مل رہا ہے۔

چوہدری اسماعیل سرور اور پرویز اختر بھٹی نے ادبی محفل کو کامیاب بنانے اور اردو ادب کے لیے دریچہ کی طرف سے کی جانے والی کوششوں کو سراہا اور انہیں پھولوں کا گلدستہ پیش کیا۔ پروگرام کے آخر پر ریفریشمنٹ کا بھی بہترین انتظام موجود تھا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button