پنڈدادنخاناہم خبریں

ٹی ایچ کیو ہسپتال پنڈدادنخان میں ڈاکٹروں کا فقدان، 5 لاکھ آبادی کیلئے صرف 1 ڈاکٹر

پنڈدادنخان: تحصیل ہیڈ کوارٹرہسپتال میں ڈاکٹروں کا فقدان، 10ڈاکٹروں کی پوسٹ پر ایک ڈاکٹر کام کر رہا ہے 9خالی ۔کروڑوں روپے ہسپتال پر لگا دئیے لیکن ڈاکٹروں کی کمی کو پورا نہ کیا گیا، دانتوں کی مشین خراب ڈینٹل سرجن کے پاس عملہ نہیں، ایک لیبارٹری اسسٹنٹ پوری تحصیل کے مریضوں کے لیے کام کر رہا ہے، علاج معالجہ کے لیے شہری ذلیل و خوار ہوتے ہیں، لیبارٹری میں رش ۔

تفصیلات کے مطابق تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال پنڈدادنخان جو کہ تحصیل کی 5 لاکھ کی آبادی کے لیے اکلوتی بڑی علاج گاہ ہے لیکن افسوس کا مقام ہے کہ حکومت پنجاب نے ہسپتال کو خوبصورت بنانے کے لیے کروڑوں روپے خرچ کر دئیے لیکن ہسپتال میں 10ڈاکٹروں کی آ سامیاں ہیں جن میں 9 خالی میں اور 5 لاکھ کی آبادی کے لیے ایک ڈاکٹر کام کر رہا ہے جس سے مریضوں کوعلاج معالجہ کے لیے سخت پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

ہسپتال کے ڈینٹل ڈیپارنمنٹ میں مشینیں ایک عرصہ سے خراب ہے بلکہ ڈینٹل ڈیپارنمنٹ میں ڈاکٹر کے علاوہ کوئی عملہ موجود نہیں ہے۔ ہسپتال کی لیبارٹری میں ہر قسم کے ٹیسٹ کرنے کے لیے 5لاکھ کی آبادی کے لیے صرف ایک ٹیکنیشن کام کر رہا ہے جن سے مریضوں کو سخت پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

ہسپتال کا سب سے اہم مسئلہ ڈاکٹروں کی رہائش گا ئیں نہ ہونے کی وجہ سے یہاں کوئی ڈاکٹر بھی رہنے کے لیے تیار نہیں ہوتا۔ اہل علاقہ اور عوام دوست گروپ نے حکومت پنجاب سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے مسائل کو فوری حل کیا جائے اور ڈاکٹروں کی خالی آسامیوں پر فوری ڈاکٹر تعینات کیے جائیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button