Daily updated News, Photo & Vidoes website of Jhelum, Pakistan

حلقہ پی پی27 اور وزارت اعلیٰ پنجاب — تحریر: چوہدری زاہد حیات

0

حلقہ پی پی ستائیس جو کم بیش چھ لاکھ آبادی پر مشتمل ہے اور اس کا زیادہ حصہ تحصیل پنڈدادنخان پر مشتمل ہے۔ پنجاب کی پس ماندہ ترین تحصیلوں میں اس کا شمار ہوتا ہے ۔ یہاں انتخابی معرکہ زور و شور سے جاری ہے بہت سے امیدوار یہاں سے حصہ لے رہے ہیں لیکن چوہدری فواد پاکستان تحریک انصاف راجہ فاروق تحریک لبیک یا رسول اللہ، حاجی ناصر للِہ مسلم لیگ ن اور سید شمس حیدر کے درمیان مقابلہ نظر آرہا ۔

اس پسماندہ ترین تحصیل کے مسائل کے حل کا دعوی کیا جا رہا ہے ۔ پنڈدادنخان پس ماندگی کی اس سطح کو چھو رہا ہے کہ ایک آدھ میگا پراجیکٹ بھی نا کافی ہو گا، اس تحصیل کو پسماندگی سے نکالنے کے لیے اس تحصیل کے مسائل کے حل کے لیے ہنگامی بلکہ جنگی بنیادوں پر کام کرنا ہوگا ۔ اب یہ کام کون کر سکتا ، کس میں یہ سب کرنے کی صلاحیت موجود ہے ان میدان میں موجود امیدواروں میں سے۔

یہ غیر جانب دار ہو کر دیکھنا ہو گا ، بلاشبہ یہ سارے امیدوار بہت با صلاحیت اور تحصیل کا درد رکھتے ہیں لیکن پنڈدادن خان جس طرح کے مسائل میں گھرا ہوا اس کے حل کے لیے اس شخصیت چاہیے جو ہر فورم پر مسئلہ اٹھا سکے اگر وہ کامیاب ہو تو اس کا پارٹی میں وہ مقام ہو کہ وہ کسی اعلی ترین عہدے پر پہنچ سکے ۔ بلاشبہ چوہدری فواد میں یہ ساری خوبیاں موجود ہیں ۔

چوہدری فواد اور تحریک انصاف اگر کامیاب ہوتی ہیں تو بلاشبہ چوہدری فواد اگر مرکز میں بھی ہوں تو ان کو کوئی مظبوط اور اہم وزرات ملے گی ۔ جو اس حلقے کے لئے ایک بریک تھرو بن سکتا، تحریک انصاف اگر پنجاب میں کامیاب ہوتی ہے تو چوہدری فواد بلاشبہ وزارت اعلی کے مظبوط امیدوار ہیں، چوہدری فواد ہر لحاظ سے پنجاب کی وزات اعلی کا اہل ثابت ہو سکتا اور ہو چکا۔

چوہدری فواد اگر وزارت اعلی پنجاب تک پہنچ جاتے ہیں تویہ پی پی ستائیس کی فتح ہو گی ، اس پسماندہ ترین تحصیل کے لیے ترقی کے بلاشبہ نئے راستے کھلیں گے ۔نہر گیس ہسپتال یہ پھر پنڈدادن خان کے دسترس میں ہوگے اور انشاء اللہ ملیں گے۔ یہ پراجیکٹ پی ڈی خان کو یہ میری رائے نہیں یہ ایک حقیقت ہے ۔ چوہدری فواد عزم رکھتا ہے پی ڈی خان بلکہ جہلم کے مسائل کے حل کے لیے اور اس میں یہ سب کرنے کی صلاحیت بھی ہے، اور اگر چوہدری فواد کی شکل میں وزارت اعلی پنجاب پی پی ستائیس کو ملتی ہے تو یہ نا صرف پنڈدادنخان بلکہ جہلم کے لیے ایک سنگ میل ثابت ہوگا ۔

حلقہ پی پی ستائیس اب مظبوط ترین امیدوار پنجاب کی وزرات اعلی کی ۔ جس تحصیل کے نام سے اعلی احکام اور حکمران کل تک نا واقف تھے ، اج وہ وزارت اعلی پنجاب کی مظبوط ترین امیدوار۔ اس بات سے ہی اندازہ کیا جا سکتا کہ چوہدری فواد کا سیاسی قد کاٹھ کیا ہے ۔ انشاء اللہ اب پی پی ستائیس اور جہلم بدلنے والے ۔ جہلم کا نام اب میڈیا اور جلسوں کے بعد ایوانوں میں بھی گونجے گا اور پنجاب کی پسماندہ ترین تحصیل انشاء اللہ پنجاب کی سربراہی کرے گی ۔ چوہدری فواد کی شکل میں۔

 

 

 

 

(ادارے کا لکھاری کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔)

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.