جلالپورشریف میں بااثر تاجر اور بگڑے رئیس زادوں نے سکول ٹیچر کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا

0

پنڈدادنخان کے قصبہ جلالپورشریف میں با اثر تاجر اور بگڑے رئیس زادوں جاوید قمر ذرگر اور محمد اکبر نے معمولی تلخ کلامی کے بعد علاقہ کی معروف سماجی شخصیت گورنمنٹ بوائز ہائیر سیکنڈری سکول جلالپورشریف کے ایس ایس ٹی ٹیچر حافظ عبدالسبحان کو ریوالور کے بٹ مار کر شدید زخمی کر دیا جس کے بعد پولیس تھانہ جلالپورشریف نے واقعہ کی رپٹ درج کرنے کے بعد نقشہ مضروبی مرتب کر کے میڈیکولیگل رپورٹ کیلئے رورل ہیلتھ سنٹر جلالپورشریف منتقل کر دیا ہے۔

عینی شاہدین نے صحافیوں کو تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ دو اشخاص کے درمیان تو تکرار جاری تھی جبکہ حافظ عبدالسبحان معاملہ رفع دفع کروانے کے بعد اپنے گھر داخل ھو گئے تو بگڑا رئیس ذادہ جاوید قمر ذرگر عرف قمر سنیارا مسلح ریوالور ان کے گھر داخل ہو گیا اور چادر چاردیواری کا تقدس پامال کرتے ہوئے انہیں گھسیٹتے ہوئے اندر سے باہر گلی میں لے آیا جہاں پر دونوں بھائیوں محمد اکبر اور جاوید قمر زرگر نے انہیں تشدد کا نشانہ بنانا شروع کر دیا۔

قابلِ ذکر بات یہ ہے کہ مذکورہ شخص قمر سنیارا انتہائی بااثر ہے اور اس سے قبل بھی متعدد مرتبہ لوگوں کو تشدد کا نشانہ بنا چکا ہے اور تھانے اور ہسپتالوں میں بھی جا کر پولیس افسران اور میڈیکل آفیسرز کو بھاری رشوت دیکر انصاف کے عمل میں بھی رکاوٹ ڈالنے کی کوشش کرتا ہے جبکہ انتہائی باوثوق ذرائع کے مطابق قمر سنیارے نے خود کو ذہنی مریض ثابت کرنے کیلئے ایک میڈیکل سرٹیفکیٹ بھی بنوا رکھا ہے۔

قابلِ ذکر بات یہ ہے کہ قمر سنیارا نامی یہ شخص علاقہ جالب کاسب سے بڑا سونے کا تاجر ہے جہاں ایک جانب اس نے اپنا میڈیکل سرٹیفکیٹ سنبھال رکھا ہے وہیں کروڑوں روپے کا بزنس بھی اکیلے سنبھال رکھا ہے تاہم علاقے کے عوام نے وزیر اعلیٰ پنجاب،آئی جی پنجاب اور ڈی پی او جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ ان بگڑے رئیس زادوں کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لا کر نشان عبرت بنایا جائے تاکہ انصاف کا بول بالا ہو اور قانون نافذ کرنے والے اداروں پر انحصار قائم رہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.