جہلم میں سرکاری ہاؤسنگ سوسائٹی میں سرکار کا ملازم تین سال سے تنخواہ سے محروم

0

جہلم: جی ٹی روڈ کے ساتھ موجود سرکاری ہاؤسنگ سوسائٹی میں سرکار کاملازم تین سال سے تنخواہ سے محروم ہے، نوبت فاقوں تک آگئی۔مجھے تنخواہ نہ ملی تو ڈی سی دفتر کے باہر آگ لگا کر خودکشی کر لوں گا ۔رحیم بخش

تفصیلات کے مطابق پانچ بچوں کا باپ رحیم بخش جو کہ جہلم جی ٹی روڈ پر موجود سرکاری ہاؤسنگ سوسائٹی میں عرصہ 9 سال سے ڈیوٹی سر انجام دے رہا ہے کئی مربع پر محیط سوسائٹی کی مکمل چوکیداری کرتا ہے لیکن گزشتہ تین سالوں سے اسکو تنخواہ نہیں مل رہی۔

رحیم بخش کے مطابق مجھے پہلے 6 سال تنخواہ کی باقاعدگی سے ملتی تھی لیکن پچھلے تین سالوں سے ڈیوٹی دینے کے باوجود مجھے محکمہ پنجاب ہاوسنگ و ٹاون پلاننگ نے میری تنخواہ روک رکھی ہے۔

اسکا کا مزید کہنا تھا میرے گھر میں فاقوں کی نوبت اگئی ہے اور میں نے رشتداروں سے قرض لے کر بچوں کی شادیاں کی لیکن اب وہ بھی تنگ کرتے ہیں کہ قرضہ واپس کرو میں نے متعدد بار وزیراعلی پنجاب میاں شہباز شریف کو اپنی درخواستیں دی لیکن میری شنوائی نہیں ہوئی۔

اس حوالے سے جب پنجاب ہاؤسنگ و ٹاؤن پلاننگ کے ڈپٹی ڈائریکٹر کے آفس موقف لینے گئے تو وہ اپنی سیٹ پر موجود نہ تھے۔رحیم بخش نے ہاتھ جوڑ کر وزیر اعلی پنجاب سے مطالبہ کیا کہ اس بات کا نوٹس لیں ورنہ میں خودکشی کرنے پر مجبور ہو جاؤں گا۔

Advertisement

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.