پنڈی سید پور میں بھٹہ مزدور یونین کے تحصیل و ضلعی عہدیداران کی کارنر میٹنگ

بھٹہ مالکان کی جانب سے مزدوروں کے ساتھ انسانیت سوز سلوک ناقابلِ برداشت ہے۔ ممتاز ظہور

0

جہلم:تحصیل پنڈدادنخان کے علاقہ پنڈی سید پور میں بھٹہ مزدور یونین کے تحصیل و ضلعی عہدیداران کی کارنر میٹنگ،بانڈیڈ لیبر لبریشن فریڈم یونین پنجاب کی صدر میڈم ممتاز ظہور کی خصوصی شرکت۔

اس موقع پر میڈم ممتاز ظہور نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھٹہ مالکان کی جانب سے مزدوروں کے ساتھ انسانیت سوز سلوک ناقابلِ برداشت ہے،گزشتہ دنوں ہرن پور میں حاجی سلطان کے بھٹہ پر ہمارے ایک مزدور ساتھی اور اسکی بیوی کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا اور تو اور مزدوروں میں سے اگر کوئی بیمار پڑ جائے تو میڈیسن کے لیے پیسے بھی نہیں دیے جاتے،اگر بھٹہ مزدور کی محنت اور اس کو دی جانے والی اجرت کا سابقہ ریکارڈ سامنے رکھ کر دیکھا جائے تو ہر بھٹہ مالک اپنے ایک ایک مزدور کا مقروض ہے۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ ادوار میں گورنمنٹ کی جانب سے بھٹہ مزدور کی جو اجرت مقرر کی گئی بھٹہ مالکان کی جانب سے اس کا نصف حصہ اجرت مزدور کو دی گئی جبکہ گزشتہ سال 2017میں ایک ہزار پختہ اینٹ کا سرکاری ریٹ 1110روپے مقرر ہوا جبکہ بھٹہ مالکان کی جانب سے تاحال اس پر بھی عمل درآمد نہیں کیا گیا اور بھٹہ مالکان اپنی ہٹ دھرمی پر قائم ہیں اور حکومتی احکامات کو پاؤں تلے روندتے ہوئے اب بھی مزدور کو 700روپے اجرت دے رھے ہیں اور اس میں سے بھی مختلف بہانوں سے کٹوتی کر لی جاتی ہے۔

میڈم ممتاز ظہور نے کہا کہ حکومت کی جانب سے جاری کردہ 1110روپے کے نوٹیفکیشن پر عملدرآمد کے لیے میں نے ڈی سی جہلم کو تحریری درخواست دے دی ہے اگر 15فروری تک کوئی مناسب جواب نہ ملا تو انشاء اللہ 16فروری بروز جمعہ ضلع بھر کے بھٹہ مزدور جہلم میں پرامن احتجاجی دھرنا دیں گے اور اس وقت تک دھرنا ختم نہیں ہو گا جب تک ہمارے جائز مطالبات پورے نہ ہو جائیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکمرانوں کیلئے لمحہ فکریہ ہے،کسی بھی قسم کا نوٹیفکیشن جاری کر دینا کوئی بڑی بات نہیں بلکہ سب سے اھم چیز ہے جاری کردہ نوٹیفکیشن پر عملدرآمد کروانا،جس میں تاحال حکومت ناکام نظر آتی ہے تاھم بھٹہ مزدوروں کو ان کا حق دلوانے کے لیے مجھے جہاں تک جانا پڑا جاؤں گی اور آخر دم تک مزدوروں کے حقوق کی جنگ لڑوں گی۔

Advertisement

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.