Daily updated News, Photo & Vidoes website of Jhelum, Pakistan

مسلم لیگ ن کے 5 سالہ دور اقتدار میں تحصیل دینہ میں بڑے پراجیکٹ پر کام نہ ہو سکا۔ رپورٹ

چھوٹے چھوٹے ترقیاتی کام پایا تکمیل تک پہنچے لیکن تحصیل دینہ کے بڑے مسائل جوں کے توں موجود

0

دینہ: مسلم لیگ ن کے پانچ سالہ دور اقتدار میں تحصیل دینہ کے بڑے پراجیکٹ پر کام نہیں ہو سکا ،چھوٹے چھوٹے ترقیاتی کام پایا تکمیل تک پہنچے لیکن تحصیل دینہ کے بڑے مسائل جوں کے توں موجود ،سوئی گیس کا وعدہ وفا نہ ہو سکا ،منگلا روڈ تباہی کے دہانے پر،نکاسی آب کا مسئلہ شہر دریا کا منظر پیش کرتا ہے،تحصیل دینہ میں آر ایچ سی کو تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال کا درجہ نہ مل سکا ،ڈاکٹروں کی کمی اور دیگر سہولیات بھی نہ ہونے کے برابر،تحصیل دینہ میں عدالتوں کا کوئی نظام موجود نہیں ہے ،عوام کو اپنے مسائل کے لیے جہلم کچہری جانا پڑتا ہے ،عوامی سروے رپورٹ۔

جہلم اپڈیٹس نے تحصیل دینہ میں مسلم لیگ ن کے پانچ سالہ دور اقتدار میں ترقیاتی کاموں کے حوالے سے ایک سروے کیا گیا جس میں یہ بات د یکھنے کو ملی کہ مسلم لیگ ن تحصیل دینہ کی مقامی قیادت تحصیل دینہ کے حوالے سے مین پراجیکٹ پر کام نہیں کروا سکی ،تحصیل دینہ کی عوام کا در ینہ مطالبہ جو ہر گھر کی ضرورت ہے وہ سوئی گیس ہے جس کے بار ے میں مسلم لیگ ن کے نمائندوں نے سابقہ دور حکومت میں وعدے کیے جو اس بار بھی وفا نہیں ہو سکے اور صرف کاغذی منظوریوں سے عوام کے پیٹ کو بھرا جا رہا ہے یعنی ایک بار پھر عوام کو دھوکا دینے کا وقت آن پہنچا پھر وہی وعدے جو وفا نہ ہو سکیں گے۔

منگلا روڈ تحصیل دینہ کا دوسرا بڑا مسئلہ ہے جس کو شہر کی حدود میں توسیع کے ساتھ ساتھ دوبارہ بنانے کی ضرورت ہے ۔منگلا روڈ تباہی کے دھانے پر پہنچ چکی ہے اور اس کی تعمیر پر کافی زیادہ لاگت آنی ہے کیونکہ منگلا روڈ کی توسیع کے ساتھ ساتھ نکاسی آب کے لیے نالے کی ضرورت ہے ۔

تحصیل دینہ کا تیسرا بڑا مسئلہ ٹی ایچ کیو کو تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال کا درجہ دلوانا ہے ۔دینہ شہر کے عوام اس وقت طبی سہولتوں کے حوالے سے شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔پرائمری ہیلتھ سنٹر دینہ میں ڈاکٹر کی کمی ہے ۔اسپیشلسٹ ڈاکٹرز تو موجود ہی نہیں ہیں ۔لیبارٹرزی ،ایکسرے ،اور ادویات کا فقدان ہے۔مریضوں کے لیے بیڈز کی تعداد انتہائی کم ہے جو کہ ہمارے نمائندوں کو نظر ہی نہیں آتی ۔تحصیل دینہ میں تعلیم کے حوالے سے کوئی توجہ نہیں دی جاتی ۔

دینہ کو تحصیل بنے کافی عرصہ ہو گیا ہے لیکن اس کے باوجود تحصیل دینہ بنیادی سہولیات سے محروم ہے تحصیل دینہ میں عدالتوں کے لیے سرکاری عمارتیں ہی موجود نہیں جس کی وجہ سے تحصیل دینہ کا عدالتی نظام غیر موثر ہے اور عوام کو اپنے عدالتی مسائل کے سلسلے میں جہلم کچہری کا رخ کرنا پڑتا ہے۔مسلم لیگ ن کے عوامی نمائندوں نے تحصیل دینہ کے بڑے مسائل کی طرف کبھی توجہ ہی نہیں دی ۔پانچ سالہ دور اقتدار میں چھوٹے چھوٹے ترقیاتی کام کروائے گئے جس میں محلوں کی گلیاں شامل ہیں ۔

تحصیل دینہ میں بجلی کے حوالے سے کسی بڑے منصوبے پر کام نہیں کیا گیا جس کی بدولت عوام کو بجلی کے حوالے سے بہتر سے بہتر سہولیات میسر ہو سکتی ۔اب جب کہ الیکشن کی آمد آمد ہے ایک بار پھر یہ عوامی نمائندے اس تیاری میں ہیں کہ ہم عوام کی عدالت میں کون کون سے کاغذی پراجیکٹ لے کر جائیں جس سے عوام کو ایک بار پھر تسلی دی جا سکے ۔عوامی سروے میں یہ بات دیکھنے کو ملی ہے کہ عوام میں اپنے نمائندوں کے خلاف غم و غصہ کی لہر پائی جاتی ہے لیکن یہ عارضی ہے کیونکہ ہر علاقے کا ایک چوہدری پایا جاتا ہے جس نے عوام کو تسلی دینی ہوتی ہے اور چوہدری صاحب کو عوامی نمائندوں نے خوش کر لینا ہے جس سے ایک بار پھر عوام دھوکا کھانے کے لیے تیار رہیں۔

پنجاب کے تمام علاقوں میں سوئی گیس موجود ہے لیکن تحصیل دینہ سوئی گیس سے محروم ہے ،آئندہ آمدہ الیکشن میں عوام کا سب سے بڑا مطالبہ سوئی گیس کا ہے اگر یہ حل نہ ہوا تو عوام اس الیکشن میں کچھ اور سوچنے پر مجبور ہیں ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.