منگلا میں جاں بحق ہونے والی لڑکی کا ڈراپ سین، نوجوان لڑکی کی موت گلا دبانے سے ہوئی

رشتے کے تنازعے پر لڑکی کو قتل کیا گیا۔پولیس ذرائع

0

جہلم: تھانہ منگلا کے علاقہ چھجہ میں کرنٹ سے ہلاک ہونے والی نوجوان لڑکی کا ڈراپ سین،پوسٹمارٹم رپورٹ نے قتل کا بھانڈا پھوڑ دیا۔،ہوشین نزیر کی موت گلا دبانے سے ہوئی،متوفیہ کا والد پوسٹمارٹم کے بغیر لڑکی کو دفنانا چاہتا تھا۔پولیس ذرائع کے مطابق رشتے کے تنازعے پر لڑکی کو قتل کیا گیا۔ مبینہ طور پر قتل ہونے والی لڑکی کے والد کی جانب سے ہوشین نزیر کو کرنٹ لگنے سے موت کی رپورٹ درج کروائی گئی،پولیس نے والد اور دو ساتھیوں سمیت نامعلوم افراد کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق 5 مارچ کو تھانہ منگلا کے علاقہ چھجہ میں 17 سالا لڑکی ہوشین نزیر ولد محمد نزیر کی ہلاکت کا ڈراپ سین ہو گیا ،پوسٹ مارٹم رپورٹ میں لڑکی کی موت گلا دبانے سے ہوئی جبکہ ہلاک ہونے والی لڑکی کے والد محمد نزیر کی جانب سے پولیس کو ابتدائی رپورٹ جو درج کروائی گئی۔اس میں لڑکی کی موت کرنٹ کی وجہ سے تحریر کروائی گئی ، ہلاک ہونے والی لڑکی کا والد پوسٹمارٹم کے بغیر ہوشین نذیر کو دفنانا چاہتے تھے۔

پولیس کو ذرائع سے خفیہ اطلاع ملی کے لڑکی کو قتل کیا گیا ہے کیونکہ لڑکی کہ جسم اور گلے پر نشان تھے جسکے بعد پوسٹمارٹم کروانے کے بعد معلوم ہوا لڑکی کی موت کرنٹ سے نہیں بلکہ گلا دبانے سے ہوئی ہے ۔پولیس ذرائع کے مطابق لڑکی کو رشتے کے تنازعے پر قتل کیا گیا ہے اور اس قتل کو چھپانے کے لیے لڑکی کو قتل کر کے بجلی کے ساتھ لگایا گیا تھا تا کہ معلوم ہو سکے کہ لڑکی کی موت کرنٹ سے ہوئی ہے۔

تھانہ منگلا پولیس نے قتل ہونے والی لڑکی کے والد محمد نزیر ،محمد عارف ولد فضل داد،شبیر احمد نمبردار ساکن سناٹھہ اور دیگر نامعلوم اشخاص کے خلاف قتل کو چھپانے پولیس سے غلط بیانی اور قتل کرنے کی دفعات 302,201,34 ت پ کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے اور مقتولہ کئے والد کو بھی پولیس نے حراست میں لے لیا ہے۔

Advertisement

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.