گستاخانہ خاکوں کے خلاف جلالپورشریف میں احتجاج، ریلی نکالی گئی

0

دھریالہ جالپ: اہلیانِ جلالپور شریف اور ہزاروں اہلِ اسلام نے حضور اقدسﷺ کی شان میں 10نومبر کو ہونے والے خاکوں کی نمائش اور اس شیطانی عمل کی بھرپور مزمت کرتے ہوئے احتجاجی ریلی نکالی ۔

انجمن سوشل ویلفیئر رفاہ عامہ کے چیئرمین چوہدری عبد الرزاق،راجہ رضوان (مسقط)،ساجد ساکی، شکیل انجم حیدری، چوہدری ابو بکر، چوہدری وسیم ،بلال گوندل، مہر احسان بہادر، راجہ شیراز کوثر ،راجہ آفتاب ،مہر ذیشان قادر، موسیٰ عابد، طلحہ علی بٹ ،تیمور بخش، ذوالفقار بھون، کامران بھون، شیراز بھون ،روحیل بھون، عباس بھون ،عاصم بھون ،ملک آصف ندیم، راجہ فرقان ،حسن راجپوت، طیب گجر، حافظ ثاقب چشتی،مبشر بھٹی، ارشد بلوشر،راجہ فیصل جمشید،نبیل بھون ،چوہدری شاہد ،حماد جٹ ،چوہدری عمران ڈھیری کے علاوہ ہزاروں فرزندِ اسلام،سیاسی و سماجی اور رفاہی تنظیموں نے نمائندوں کے علاوہ صحافیوں کی بڑی تعداد نے بھی شرکت کی۔

احتجاجی ریلی چمکون چوک وگھ سٹاپ سے جب نکالی گئی تو تھانہ جلالپور شریف کی پولیس نے انہیں بھرپور انداز میں سیکورٹی فراہم کی اور پورے راستے میں پولیس کے چاک و چوبند دستے نے سیکورٹی کے فرائض سرانجام دیتے ہوئے احتجاجی ریلی کیساتھ چلتے رہے ریلی جب مین سٹاپ جلالپور شریف پہنچی تو لوگوں نے احتجاجی ریلی کا بھر پور انداز میں استقبال کیا اور لیبک یا رسول اللہ لبیک کے نعروں نے فضاء گونج اٹھی۔ریلی کو رورل ہیلتھ سنٹر جلالپور شریف کے سامنے روک کر علمائے دین نے اپنے اپنے خطاب کا اظہار کیا ۔

قاری شیراز اور قاری بشیر گوندل نے اپنے خطابات میں لوگوں کے دلوں کو حضور ﷺ کی محبت سے منور کیا اور کہا کے ہم اہلِ اسلام سے اپیل کرتے ہیں کہ دونوں جہانوں کے سردار سرور کونین حضرت محمد ﷺ کی شان میں گستاخی کرنے والے کا سر تن سے جدا کرنے کا قانون بنایا جائے ۔آخر میں شرکاء کیلئے پانی کی سبیل لگائی گئی تھی جسے تمام شرکاء میں تقسیم کیا گیا اور اس دعا کیساتھ ریلی کا اختتام ہوا کہ مسلمان آپﷺ کی ذات کیلئے اپنا سر تن سے جدا کروانے کیلئے تیار ہیں ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.