Daily updated News, Photo & Vidoes website of Jhelum, Pakistan

انٹرنیشنل اسلامک ریلیف آرگنائزیشن کے تعاون سے جہلم میں مستحق افراد میں رمضان راشن پیکج کی تقسیم

دنیا میں انسانیت کی اصل خدمت صرف اسلامی ادارے ہی کر رہے ہیں۔ حافظ عبدالحمید عامر

0

جہلم: انٹر نیشنل اسلامک ریلیف آرگنائزیشن کے تعاون سے جامعہ علوم أثریہ جہلم نے حسب سابق بیسیوں غریب، یتیم ، بیواؤںاور مستحق خاندانوں میں آٹا، گھی، چینی، چاول، بیسن ، دالیں ، کھجور پر مشتمل افطار(رمضان )راشن پیکج تقسیم کیا۔

رمضان راشن پیکج کی تقسیم کے موقع پر جامعہ کے رئیس حافظ عبدالحمید عامر نے انٹر نیشنل اسلامک ریلیف آرگنائزیشن کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس وقت دنیا میں انسانیت کی اصل خدمت صرف اسلامی ادارے ہی کر رہے ہیں، کیونکہ وہ انسانیت کی خدمت کو کاروبار کی بجائے عبادت سمجھتے ہیں۔

حافظ عبدالحمید عامر نے اخباری نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے اس مغربی پروپیگنڈے کی سخت تردید کی جس کے ذریعے وہ دینی مدارس کا تعلق دہشت گردوں کے نیٹ ورک سے جوڑنے کی کوشش کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دینی مدارس ہزاروں بے آسرا لوگوں کو جہاں تعلیم کے زیور سے آراستہ کر رہے ہیں وہیں پر وہ خدمت انسانی کیلئے ایسے افرادکار مہیا کر رہے ہیں جن کا اوڑھنا بچھونا ہی خدمت خلق ہے۔

اس موقع پر جامعہ کے مدیر حافظ احمد حقیق نے واضح کیا کہ ان کا ادارہ تعلیم و تربیت کے ساتھ ساتھ رفاہ عامہ کے کاموں میں بھی دن رات مصروف عمل ہے اور سینکڑوں یتیموں کی کفالت کے ساتھ ساتھ ہسپتال ، ڈسپنسری چلا رہا ہے اور گاہے بگاہے فری میڈیکل و آئی کیمپوں کا انعقاد کرتا ہے۔

حافظ احمد حقیق نے مزید بتایا کہ انٹر نیشنل اسلامک ریلیف آرگنائزیشن ایک رفاہی تنظیم ہے جو پاکستان کے علاوہ دنیا بھر کے ضرورت مند اور محتاجوں کی مدد کیلئے رفاہی کام کرتی ہے اور گزشتہ کئی سالوں سے پاکستان میں اپنے مختلف رفاہی منصوبوں کو جامعہ علوم أثریہ کی وساطت سے عملی جامہ پہنارہی ہے۔

اس موقع پر امدادی سامان حاصل کرنے والوں نے جامعہ أثریہ اور انٹر نیشنل اسلامک ریلیف آرگنائزیشن کے تعاون کا شکریہ ادا کیا اور خصوصاً ڈائریکٹر جنرل (IIRO)سعادۃ الشیخ ڈاکٹر عبدہ محمد ابراہیم عتین حفظہ اللہ اور ڈپٹی ڈائریکٹر (IIRO) سعادۃ الشیخ سعد مسعودالحارثی کاشکریہ ادا کیااس موقع پر مندوب رابطہ عالم اسلامی محترم جناب جاوید بٹ بھی موجود تھے ۔ تمام حاضرین نے تقسیم کے عمل کو نہایت سراہا اور شفاف قرار دیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.