واٹر سپلائی کی انتہائی بوسیدہ پائپ لائنیں جگہ جگہ سے لیک، دینہ کے باسی گندا پانی پینے پر مجبور

0

دینہ: شہری واٹر سپلائی کا گندا پانی پینے پر مجبور ،بوسیدہ پائپ لائنوں اور گندے نالوں سے گزرنے والی پائپ لائینوں میں انتہائی گندا پانی عوام میں موت بانٹنے لگا ،واٹر سپلائی کے پائپوں میں گندے نالوں اور نالیوں کا پانی مکس ہو رہا ہے ،عوام میں ہیپاٹائٹس کی بیماری پھیلنے کا اندیشہ ۔

تفصیلات کے مطابق دینہ شہر کی زیادہ تر آبادی کے پینے کا پانی کا دارو مدار واٹر سپلائی پر ہے، واٹر سپلائی کا پانی انتہائی گندا اور بدبودار ہے ۔سالوں سے بچھی واٹر سپلائی کی زنگ آلود پائپ لائنیں جگہ جگہ سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں، واٹر سپلائی کی زیادہ تر پائپ لائینیں گلیوں اور محلوں میں نالیوں سے گزرتی ہیں ۔پائپوں کی ٹوٹ پھوٹ کی وجہ سے نالیوں کا پانی واٹر سپلائی کے پائپوں میں شامل ہو جاتا ہے جو کہ دینہ شہر کی عوام استعمال کر رہی ہیں ۔

واٹر سپلائی کے پائپ انتہائی زنگ آلود ہیں، کئی سالوں سے ڈالی گئی واٹر سپلائی کی پائپ لائنیں تبدیل نہیں کی گئی ہیں ۔واٹر سپلائی کے پائپ لائنوں کی سب سے بڑی پریشانی ان کا نالیوں اور نالوں سے گزرنا ہے جس کی وجہ سے صاف پینے کے پانی کی بجائے عوام کو نالیوں کا گندا مکس پانی سپلائی کیا جا رہا ہے۔

واٹر سپلائی میں گندا پانی شامل ہونے کی وجہ شہریوں میں مختلف بیماریاں جنم لے رہی ہیں جن میں خصوصا ہیپاٹائٹس کی بیماری جو کہ جان لیوا بیماری ہے پھیلنے کے خدشات بڑھ گئے ہیں ۔عوامی حلقوں نے ڈپٹی کمشنر جہلم ،اسسٹنٹ کمشنر دینہ سے مطالبہ کیا ہے کہ دینہ شہر میں واٹر سپلائی کو حوالے سے درپیش مسائل کا فوری طور پر نوٹس لیا جائے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.