تحصیل پنڈدادنخان میں نا تجربہ کار بغیر لائسنس اور بغیر لا ئٹس چنگ چی رکشہ ڈرائیوروں کی بھرمار

0

کھیوڑہ سمیت تحصیل بھر کے گردونواح میں نا تجربہ کار بغیر لائسنس اور بغیر لا ئٹس چنگ چی رکشہ ڈرائیوروں کی بھرمار،ٹریفک قوانین سے نابلد سینکڑوں نو عمر رکشہ ڈرائیورز بڑی سفید لیزر فرنٹ لائٹ اور بغیر بیک لائٹس مسلسل جان لیوا حادثات کا سبب بن رہے ہیں، مقامی انتظامیہ ان سینکڑوں رکشوں سے فی پھیرا ٹول ٹیکس لینے تک محدود ہے شہر بھر میں سیکڑوں کی تعدا د میں ان غیر رجسٹر ڈ رکشوں کی وجہ سے ٹریفک جام معمول بن گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کھیوڑہ تا پنڈدادنخان اور اس کے گردونواح میں کم عمر اور تیز رفتا ر چنگ چی رکشہ ڈرائیوروں نے انت مچا رکھی ہے کم عمری کے سبب ان کے پاس لائسنس ہونے کا سوا ل ہی پیدا نہیں ہوتا رکشے کو ہوائی جہاز سمجھ کر اڑانے والے یہ لاتعداد بچے محکمہ ٹریفک کی ناک تلے کیسے چل رہے ہیں اس کا جواب مشکل نہیں ہے۔

دوسری جانب مقامی انتظامیہ ان رکشوں سے فی پھیرے کے حساب سے رقم بٹورنے تک محدود ہے ،ایک ایک سواری کے لالچ میں اکثر ان رکشوں کے درمیان ریس لگی ہو تی ہے اس کے ساتھ ساتھ ان رکشوں میں اوورلوڈنگ بھی معمول بن چکا ہے ،اکثر رکشوں کی بیک لاہٹس سرے سے غائب ہیں تیز رفتاری میں داہیں باہیں بغیر اشاروں سے مڑنے پر بھی متعدد حاثات ہو چکے ہیں۔

یہ تیز رفتار کم سن ڈرائیور اپنے ساتھ کئی دوسری انسانی جانوں کے ضائع ہونے کا مستقل سبب بن رہے ہیں جبکہ لوکل ٹرانسپورٹ نا ہونے سے غریب مجبور عوام ان میں سفر کرنے پر مجبور ہیں مقامی لوگوں کا ذمہ دار محکوں کے اعلی حکام سے مطالبہ ہے کہ ٹریفک قوانین کی روشنی میں احکامات جارہی کیے جائیں ۔

Advertisement

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.