کھیوڑہ میں محکمہ سوئی نادرن گیس کی مبینہ کرپشن کا پول کھل گیا، جگہ جگہ سے گیس پائپ لائنیں لیک

0

پنڈدادنخان:کھیوڑہ میں محکمہ سوئی نادرن گیس کی مبینہ کرپشن کا پول کھل گیا حال ہی میں بچھائی جا نے والی گیس پائپ لائن ہائی پریشر کے ساتھ جگہ جگہ سے لیک جو کہ کسی بھی وقت کسی بڑے حادثے کا سبب بن سکتاہے، گزشتہ روز بھی لیکج کے باعث آگ بھڑک اُٹھی تھی ۔

تفصیلا ت کے مطابق کھیوڑہ کے محلہ دھمرایا وارڈ نمبر سترہ جو کہ پانچ سو سے زائد گھروں پر مشتمل ہے میں گیس پائپ لائنیں بچھائی گئی ہیں جو کہ انتہائی ناقص پلاسٹک کی ہیں جوکہ تقریبا ایک فٹ زمین کے نیچے ہیں اور جگہ جگہ سے ہائی پریشر کے ساتھ گیس لیک ہورہی ہے اسی لیکج کی وجہ سے گزشتہ دنوں آگ بھڑک اُٹھی تھی لیکن ریسکیو1122پنڈدادنخان کی ٹیم نے موقع پر پہنچ کر آگ پر قابو پالیا ۔

آگ لگنے کے باوجود اُس کے باوجود بھی نا تو لیکج کو ختم کیا گیا اور نہ ہی سروس کنکشنوں ٹھیک کیا گیا جبکہ مقامی آفیسر طاہر نامی شخص نے سب اچھا کی رپورٹ دے کا اہل محلہ کو موت کے منہ میں دھکیل دیا ہے اور پی ٹی آئی کے مقامی کارکن نے گیس کی جلد فراہمی کے لئے فی کنکشن دو سو روپے سے لے کر پانچ سوروپے وصول کئے ہیں کروڑوں روپے کی لاگت سے ہونے والے کا م کا ٹھیکیدار اور عملہ بھی غائب ہے۔

اہل محلہ کا کہنا ہے ٹھیکیدار ظفر شاہ آف راولپنڈی نے انتہائی ناقص قسم کی پائپ لائنیں بچھائی ہیں جس کی وجہ سے لیکج کا مسلہ پیش آرہا ہے اہل محلہ نے اپنی مدد آپ کے تحت جب کنکشن چیک کئے تو پائپ لائنوں کے جوڑ لگے ہوئے ہی نہیں تھے بغیر جوڑ لگائے ہی لائنوں کو دبا دیا گیا جس کی وجہ سے گیس ضائع ہو رہی ہے اور کسی بھی وقت بڑا حادثہ پیش آسکتا ہے۔

اہل محلہ نے احتجاج کرتے ہوئے ذمہ داران سے مطالبہ کیا ہے کے اس مسئلہ کو فوری حل کیا جائے اور جب تک لیکج ختم نہیں ہوتی گیس کی فراہمی بند کر دی جائے ۔

Advertisement

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.