Daily updated News, Photo & Vidoes website of Jhelum, Pakistan

پسند کی شادی کی خواہش جرم بن گئی، لڑکی غیرت کے نام پر قتل

0

جلالپورشریف: پسند کی شادی کی خواہش جرم بن گئی، غیرت کے نام پر ہوا کی ایک اور بیٹی موت کے گھاٹ اتار دی گئی، پولیس نے مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی ۔

تفصیلات کے مطابق جلالپورشریف کی رہائشی لڑکی رفعت دختر سخی محمدکو مبینہ طور پر گلہ گھونٹ کر قتل کر دیا گیا ۔ رفعت بی بی عرف شگفتہ مقامی لڑکے محمد حسین ولد راسب خان سے شادی کرنا چاہتی تھی، گزشتہ رات شگفتہ گھر سے بھاگ کر محمد حسین کےگھر آگئی تھی،لڑکی کے ورثاء رات بھر شگفتہ کو گھر لے جانے کے لیے منتیں کرتے رہے۔

چار روز بعد بارات کے ساتھ رخصتی کا بہانہ کرکے اپنے ساتھ لے آئے اور گھر آنے کے بعد اسے زہر دیا اور پھر غیرت کے نام پر قتل کر کے خودکشی کا رنگ دینے کی کوشش کی۔ پولیس نے لڑکی کی نعش تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لیے تحصیل ہیڈ کوارٹر پنڈدادنخان منتقل کر دی ۔ جہاں سے لاش پوسٹمارٹم کے بعد لواحقین کے حوالے کر دی گئی۔یاد رہے کہ مبینہ طور پر قتل ہونے والی لڑکی کے ورثاء پورسٹمارٹم نہ کرنے کیلئے بار بار مداخلت کرتے رہے۔

ادھر مبینہ طور پر قتل ہونے والی لڑکی کی والدہ نے کہنا ہے کہ میری بیٹی گزشتہ روز گھر سے لاپتہ تھی جس کو تلاش کرتے ہو محمد راسب کے گھرگئی تو میری بیٹی وہاں موجود تھی جس کو میں گھر لے آئی گھر انے پر میری بیٹی نے بتایا کہ مجھے حسین والد راسب نے پانی میں کوئی چیز ملا کر پلا دی ہے جس سے میری طبیعت خراب ہو رہی تھی کہ گھر میں موجود زین ولد خوشی محمد غصے میں آ گیا اور اس نے رفعت کا گلہ گھونٹ دیا۔ میری بیٹی کو حسین راسب اور زین نے قتل کیا ہے ان کے خلاف کاروائی ہونی چاہیے ۔

ڈی ایس پی پنڈدادنخان سیف الرحمان کے مطابق لڑکی کی موت واقع ہوئی ہے اور لڑکی کا گلا دبا کر اسے قتل کیا گیا ہے اس میں گھر کا کون کون فرد ملوث ہے یہ سب کچھ تفتیش کے بعد ہی معلوم ہوگا لیکن یہ بات یقینی ہے کہ لڑکی کو قتل کیا گیا ہے۔

پولیس نےمقدمہ نمبر46 دفعہ 302۔34۔109 ت پ کے تحت درج کر کے تفتیش شروع کر دی ۔ پولیس نے لڑکی کے آشنا محمد حسین اور کے والد راسب کو مقدمہ میں شامل کر لیا گیا ہے جبکہ ذرائع کے مطابق پولیس نے محمد حسین کو گرفتار کر لیا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.